کھانا ٹیک اوے کرنے والے پلاسٹک کے ڈبوں کے خواتین کی صحت پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں؟ سائنسدانوں نے ماں بننے کی خواہشمند خواتین کو وارننگ جاری کردی

کھانا ٹیک اوے کرنے والے پلاسٹک کے ڈبوں کے خواتین کی صحت پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں؟ سائنسدانوں نے ماں بننے کی خواہشمند خواتین کو وارننگ جاری کردی

کھانا ٹیک اوے کرنے والے پلاسٹک کے ڈبوں کے خواتین کی صحت پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں؟ سائنسدانوں نے ماں بننے کی خواہشمند خواتین کو وارننگ جاری کردی

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) بازار سے کھانا گھر لیجانے کے لیے استعمال ہونے والے پلاسٹک کے ڈبوں کے متعلق اب سائنسدانوں نے خواتین کے لیے انتہائی سخت وارننگ جاری کر دی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق نئی تحقیق میں یونیورسٹی آف مشی گن سکول آف پبلک ہیلتھ کے سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ ان پلاسٹک کے ڈبوں میں خطرناک پی ایف اے ایس کیمیکلز پائے جاتے ہیں جو خواتین کی جنسی صحت اور افزائش نسل کی صلاحیت کو تباہ کر دیتے ہیں۔ کم عمری میں ہی جن لڑکیوں کے جسم میں ان خطرناک کیمیکلز کی مقدار پہنچنی شروع ہو جائے انہیں دو سال پہلے ہی ماہواری آنی شروع ہو جاتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ یہ خطرناک کیمیکلز خواتین کے جسم میں پہنچ کر ان کے رحم اور متعلقہ اعضاءپر انتہائی منفی اثرات مرتب کرتے ہیں اور ان کا فنکشن بگاڑ کا شکار ہو جاتا ہے۔ یہ کیمیکلز خواتین میں اینڈوکرین سسٹم کو بھی تباہ کر ڈالتے ہیں۔ یہ سسٹم ایسے غدودوں کا مجموعہ ہے جو خواتین میں جنسی فنکشن کو منظم کرتا ہے۔تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ پروفیسر ننگ ڈنگ کا کہنا تھا کہ ”یہ کیمیکلز خواتین میں ماں بننے کی صلاحیت کم کرتے، روئیے اور مزاج کے مسائل اور ان کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں میں مختلف قسم کی معذوریوں کا سبب بنتے ہیں۔ اس کے علاوہ یہ خواتین میں کولیسٹرول بڑھانے اور دیگر بیماریوں حتیٰ کہ کینسر کی بھی وجہ بن سکتے ہیں۔“

admin

leave a comment

Create Account



Log In Your Account



کورونا وائرس سے ڈرنا نہیں لڑنا ہے COVID-19

کورونا وائرس کا مرض بنیادی طور پر متاثرہ شخص کے ساتھ رابطے کے ذریعے پھیلتا ہے جب وہ کھانسی کرتے ہیں یا چھینک کرتے ہیں۔ یہ اس وقت بھی پھیلتا ہے جب کوئی شخص کسی ایسی سطح یا چیز کو چھوتا ہے جس پر وائرس ہوتا ہے ، پھر ان کی آنکھوں ، ناک یا منہ کو چھوتا ہے۔ احتیات اگر آپ کے پاس ہلکے علامات ہیں ، تب تک گھر میں ہی رہیں جب تک آپ صحت یاب نہ ہوجائیں۔ آپ اپنی علامات کو دور کرسکتے ہیں اگر آپ: آرام کرو اور سو جاؤ گرم رکھیں زیادہ پانی پیئو گلے کی سوزش اور کھانسی کو کم کرنے میں مدد کے لئے کمرے میں ہیمڈیفائر استعمال کریں یا گرم شاور لیں

Translate »